اگرکوئی مغربین کی نمازآدھی رات تک نہ پڑھےتواسےکس نیت سےنمازپڑھناچاہئیے؟

جواب

سلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ

 اگر کوئی شخص نافرمانی یا کسی عذر کی بناء پر مغرب یا عشاء کی نماز آدھی رات تک نہ پڑھے تو بناء بر احتیاط واجب ان نمازوں کو اذان صبح سے پہلے تک ادا یا قضاء کی نیت کے بغیر (مافی الذمہ کی نیت سے) پڑھنا چاہئے۔

حوالہ:

توضیح المسائل فارسی مسئلہ ۱۸حضرت آیت‌الله‌العظمٰی خامنہ ای دامت برکاتہ

اگر آپ کو ہمارا جواب پسند آیا تو براہ کرم لائک کیجیئے
4
شیئر کیجئے